69 views
اگر کوئ یہ عقیدہ رکھے کہ اللہ نے ہوا کو حکم دیا کہ فلاں طرف چلی جا اور ہوا نے منع کر دیا تو (1) کیا ایسا کہنا اور ایسا یقین رکھنا کہ ایسا ہو سکتا ہے صحیح ہے یا نہیں ؟ (2) ایسا کہنے والا اور ماننے والا مسلم ہو سکتا ہے ؟ (3) کیا کسی موقع پر ایسے انسان کے پیچھے نماز پڑھ سکتے ہیں ؟
(4) اگر کوئ ایسے شخص کو مسلم جانے اس کا یہ عقیدہ جاننے کے بعد بھی کہ  ہوا اللہ کا کہنا نہیں مانتا ہے تو کیا وہ شخص مسلم رہے گا؟
asked Jul 10, 2018 in اسلامی عقائد by Rizwan Hussain

1 Answer

Ref. No. 39/1084

الجواب وباللہ التوفیق 

بسم اللہ الرحمن الرحیم:۔  ایسا کہنا یا عقیدہ رکھنا حرام ہے، ایسا شخص ایمان سے خارج ہوجاتاہے، اس کے پیچھے نماز نہیں ہوگی،  ایسے شخص پر توبہ اور تجدید ایمان لازم ہے۔ اللہ تعالی کے حکم کے خلاف کرنے کی  ان کے اندرقطعا استطاعت نہیں ہے۔  اور اگر عقیدہ درست ہو پھر زبان سے یوں ہی کہدیا تو بھی گناہ ہے لیکن ایمان سے خارج نہیں ہوگا۔

واللہ اعلم بالصواب

 

دارالافتاء

دارالعلوم وقف دیوبند

answered Aug 1, 2018 by Darul Ifta
...