64 views
السلام علیکم میرے شوہر باہر کے ملک میں ہوتے ھیں ہمارا نکاح اس طرح ہوا کہ ان کے بھائی کو وکیل بنا یا پھر 2021میں سات سال ہو جانے انہیں گئے اور وہ مجھے کہتے ہیں کہ وڈیو کال پر اپنا جسم دکھا ؤاور دباؤ اگر میں ان کی بات نہ مانو تو ناراض ہوتے اور مجھے ڈر ہے کہ کہیں کوئی غلط طریقہ اختیار نہ کریں مجھے کیا کرنا چاہیئے؟انکی بات مانو  تو گنا ہ تو نیں؟
asked Dec 25, 2020 in نکاح و شادی by Meerabnoreen

1 Answer

Ref. No. 1247/42-570

الجواب وباللہ التوفیق

بسم اللہ الرحمن الرحیم:۔ میاں بیوی کے لئے ایک دوسرے کے کھلے جسم کو دیکھنا جائز ہے، لیکن موبائل کے ذریعہ ویڈیو کال وغیرہ سے ایک دوسرے کے کھلے جسم  کو دیکھنا درست نہیں ہے، اس لئے کہ شوہر کے لئے اپنی بیوی کے کھلے جسم کو دیکھنا جائز ہے لیکن دکھانا کسی صورت میں جائز نہیں ہے، جبکہ ویڈیوکال کے ذریعہ تصویریں محفوظ ہوجاتی ہیں، اور اس کا غلط استعمال ہوسکتا ہے، اس لئے میاں بیوی کو اس عمل سے احتراز کرنا چاہئے، دوسری خرابی یہ ہے کہ جب دونوں دور ہیں تو کھلے جسم کو دیکھنے کی صورت میں بسا اوقات شہوت میں اضافہ ہوگا جوکہ بسا اوقات  گناہ کی طرف لے  جائے گا۔ آپ اپنے شوہر کو سمجھائیں کہ وہ کسی ایسے عمل پر مجبور نہ کریں  جس میں دونوں کا نقصان ہو۔

واللہ اعلم بالصواب

دارالافتاء

دارالعلوم وقف دیوبند

answered Jan 3 by Darul Ifta
...