19 views
فِي مَجْمُوعِ النَّوَازِلِ إذَا كَانَ بِرِجْلِهِ شِقَاقٌ فَجَعَلَ فِيهِ الشَّحْمَ وَغَسَلَ الرِّجْلَيْنِ وَلَمْ يَصِلْ الْمَاءُ إلَى مَا تَحْتَهُ يُنْظَرُ إنْ كَانَ يَضُرُّهُ إيصَالُ الْمَاءِ إلَى مَا تَحْتَهُ يَجُوزُ وَإِنْ كَانَ لَا يَضُرُّهُ لَا يَجُوزُ، كَذَا فِي الْمُحِيطِ.
فَإِنْ خَرَزَهُ جَازَ بِكُلِّ حَالٍ، كَذَا فِي الْخُلَاصَةِ.
حضرات علماء کرام سے اس عبارت میں آخری جملہ کا حل مطلوب ہے فإن خرزه جاز بكل حال سے کیا مراد ہے
asked Mar 31 in فقہ by ابو محمد

1 Answer

Ref. No. 40/1030

الجواب وباللہ التوفیق:

بسم اللہ الرحمن الرحیم:۔ اگر پیروں کی پھٹن کو سی دیا جائے تو اب پانی اندر پہونچے یا نہ پہونچے بہرصورت وضو درست ہوگا۔ واللہ اعلم بالصواب

 

 دارالافتاء

دارالعلوم وقف دیوبند

answered Apr 7 by Darul Ifta
...